Tuesday , November 12 2019
Home / Blogs / مجھے اتنا پیار نہ دو بابا​
urdu poetry

مجھے اتنا پیار نہ دو بابا​

آواز (قدسیہ نورین چٹھہ، چیچہ وطنی)
مجھے اتنا پیار نہ دو بابا​
کل جانا مجھے نصیب نہ ہو ​
یہ جو ماتھا چوما کرتے ہو ​
کل اس پہ شکن عجیب نہ ہو ​
میں جب بھی روتی ہوں بابا​
تم آنسو پونچھا کرتے ہو ​
مجھے اتنی دور نہ چھوڑ آنا ​
میں دور ہوں اور تم قریب نہ ہو ​
میرے ناز اٹھاتے ہو بابا​
میرے لاڈ اٹھاتے ہو بابا میری چھوٹ چھوٹی خواہش پہ ​
تم جان لٹاتے ہو بابا ​
کل ایسا نہ ہو اک نگری مین ​
میں تنہا تم کو یاد کروں ​
اور رو رو کے فریاد کروں ​
اے اللہ میرے بابا سا ​
کوئی پیار جتاے والا ہو میرے ناز اٹھانے والا ہو ​
میرے بابا مجھ سے عہد کرو ​
تم مجھے چھپا کے رکھوگے ​
دنیا کی ظالم نظروں سے ​
تم مجھے بچا کے رکھوگے ​



بابا​
ہر دم ایسا کب ہو پاتا ہے ​
جو سوچ رہی ہو میری لاڈو تم ​
وہ سب تو بس اک مایہ ہے ​
کوئی باپ اپنی بیٹی ​
کب جانے سے روک پایا ہے ​
سچ کہتے ہیں دنیا والے ​
بیٹی تو دھن پرایا ہے ​
گھر گھر کی یہی کہانی ہے ​
دنیا کی ریت پرانی ہے ​
ہر باپ نبھاتا آیا ہے ​
تیرے بابا کو بھی نبھانی ہے ​
دنیا کی یہ رسم پرانی ہے ​

About Muhammad Saeed

Avatar
I am Muhammad Saeed and I’m passionate about world and education news with over 4 years in the industry starting as a writer working my way up into senior positions. I am the driving force behind QLMDAN with a vision to broaden the company’s readership throughout 2019. I am an editor and reporter of this website. Address: Mehar Abad Colony, Chichawatni, Distt. Sahiwal, Punjab, Pakistan Phone: (+92) 300-825-3012 Email: admin@qlmdan.com

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *