chichawatni news

ہماری کھلی کچہریاں — چوہدری صابر رحمن ممبر پنجاب ایڈوائزری کونسل برائےاطلاعات و نشریات

یہ بات نہائیت قابل افسوس ہے کہ جس افسر کے خلاف شکایت ہوتی ہے، وہ کھلی کچہری میں افسران بالا کے ساتھ آرام کیساتھ کرسی پر بیٹھا ہوتا ہے.اس صورت ہم اپنے مسائل ختم کرنے کی کوششوں کو کیسے پروان چڑھا سکتے ہیں؟

کھلی کچہریوں کی نوبت کیوں درپیش آتی ہے۔ ؟؟اگر صرف اس ایک پوائنٹ پر غوروفکر اور کوئی بہتر پلاننگ کر لی جائے تو مسائل ختم کیے جا سکتے ہیں۔

اس کے برعکس ایس۔ایچ۔اوز کا مساجد میں جا کر عوامی مسائل سننا ایک بہترین کاوش ہے۔اس جیسی پلاننگ جو ڈریکٹ عوام سے لنک کرنے میں معاون ہوں۔پولیس کے ساتھ ساتھ دوسرے اداروں کے افسران کو بھی ضرور اپلائی کرنی چاہیے۔۔تاکہ عوام کے مسائل انہیں اپنے پاس بلا کر نہیں۔۔بلکہ ان تک پہنچ کر معلوم کیے جا سکیں۔

کھلی کچہریوں کی بجائے:
ہر ادارے کے متعلقہ افسران ترجیحی بنیادوں پر،صرف اپنے اپنے ماتحتوں پر چیک اینڈ بیلنس اور ان کو عوامی خدمت گار بنا دیں۔
افسران اپنے ماتحتوں سے عوامی شکایات کی بابت رپورٹس طلب کرنے کی بجائے،(جو کہ ہمیشہ ok ہی ہوتی ہے) خود ڈریکٹ عوام کیساتھ لنک شروع کر دیں۔۔تو میرا نہیں خیال کہ ہمیں ان کھلی کچہریوں کی ضروت رہے گی۔۔۔۔!!!

(افسران کی عوامی خدمت کی ایک مثال دینا چاہوں گا)
یورپ میں آپ کسی بھی سرکاری یا پرائیویٹ دفتر میں کسی کام کے سلسلہ میں جاتے ہیں۔ مثلاً
آپ ایک ڈاکٹر کے پاس یا پولیس کے اعلی افسر کے پاس جاتے ہیں۔
وہ ڈاکٹر یا پولیس آفیسر اپنے دفتر میں پہلے سے موجود بندے کو ڈیل کرنے کے بعد، خود اپنی کرسی سے اٹھتا ہے۔اپنے دفتر کے دروازے پر خود چل کر آتا ہے۔اور اگلے بندے کو اس کے نام کیساتھ عزت احترام کیساتھ بلاتا ہےاور اپنے ساتھ اندر اپنے دفتر لے جاتا ہے۔اگر اس افسر یا ڈاکٹر کو اپنے ہی محکمہ کے کسی دوسرے کمرے میں اس بندے کے کام کے لیے جانا پڑتا ہے ،وہی جائے گا۔ جب تک وہ کام پورا نہیں ہو جاتا۔وہ افسر یا ڈاکٹر اس بندے کی جگہ خود سب کو ڈیل اور بھاگ دوڑ کرتا نظر آتاہے۔نہ کوئی اپنی ذمہ داری کسی دوسرے افسر پر ڈالتا ہے۔نہ سائل کے چکر لگتے ہیں اور نہ ہی افسران کے لیے کوئی آفس بوائے یا ماتحت خدمتگار ہوتا ہے۔جو ملازم یا افسر جس رینک پر ہے۔اسکی جو ڈیوٹی ہے۔وہ اپنی ڈیوٹی اپنی ذمہ داری سمجھ کر پوری ایمانداری کیساتھ کرتا ہے۔

انشاءاللہ ۔۔ہم پر امید ہیں کہ ایک دن ہم بھی یہی سسٹم پاکستان کے ہر ادارے میں دیکھیں گے۔

چوھدری صابر رحمن
تحصیل نائب صدر پی ٹی آئی چیچہ وطنی، ممبر پنجاب ایڈوائزری کونسل برائے اطلاعات و نشریات ساہیوال۔

اپنا تبصرہ بھیجیں