KASHMIR ISSUE

پالا پڑاہےکرگس کوشاہینوں سے

ظاہر کیونکرخجلت ہونہ جبینوں سے پالاپڑاہےکرگس کوشاہینوں سے عرش سے فرش پہ آیاہےوہ خودسرخود ٹکرایاہےجوبھی فرش نشینوں سے جانتاہےدراصل زبانِ آہن وہ اس کاسمجھنامشکل ہےآئینوں سے حکمِ خالق ارض وسماسےبکھراوہ جوبھی لڑامظلوموں سےمسکینوں سے جب ہی توباطل کےپسینےچھوٹ گۓ ٹکرایاہےاہلِ مزید پڑھیں

urdu shayari

میں اپنا دکھ کس سے کہوں؟

میں نئی نویلی دولہن بڑے ارمانوں سے ، بڑی آرزوؤں سے اپنی نئی دنیا بسانے آئی …! میری دعائیں قبول ہوئیں آرزوئیں پوری ہوئیں ارماں پورے ہوئے ….! چاند سا بیٹا ملا ، دل ویراں گلزار ہوا میرا سہارا بنے مزید پڑھیں